شاعری

چڑیا بولی چوں چوں چوں: اظہر نیاز

چڑیا بولی چوں چوں چوں کوا بولا کاں کاں کاں سورج بولا صبح ہوئی مینڈک بولا چپ ہو جا پھولوں سے خوشبو بولی دیکھو شبنم روٹھ چلی جلدی سے اسکول چلو با با بولے ببلو کو پاں پاں کرتی بولی کار ببلو بولا میں تیار

اور میں بول گیا جھوٹ : اظہر نیاز

کبھی لگتا ہے کوئی ہے کہیں تو کبھی لگتا ہے نہیں دور ، یہیں تو روکتے رہ گئے سب لوگ نہ جاو اس طرف اور میں تیرے تجسس میں ہوا گم ، وہیں تو میں نے کہنا تھا محبت ہے مجھے —- اور —- اور میں بول گیا جھوٹ—– نہیں تو

اردو ادب

چڑیا بولی چوں چوں چوں: اظہر نیاز

چڑیا بولی چوں چوں چوں کوا بولا کاں کاں کاں سورج بولا صبح ہوئی مینڈک بولا چپ ہو جا پھولوں سے خوشبو بولی دیکھو شبنم روٹھ چلی جلدی سے اسکول چلو با با بولے ببلو کو پاں پاں کرتی بولی کار ببلو بولا میں تیار

نثر

’انصاری ‘انتظار کرنا میرا کالم۔ اظہر نیاز

ایک دینی تنظیم کی طرف سے زلزلہ زدگان کی امداد کے لیے کیمپ لگا ہوا تھا۔جس پر لاؤڈ سپیکر کے ذریعے اعلان ہورہا تھا اور اعانت کے لیے کہا جارہا تھا۔ جو صاحب اعلان کررہے تھے وہ غالباً زیادہ پڑھے لکھے نہیں تھے اور اس پر طرّہ یہ کہ وہ کسی ایسے علاقے سے تعلق مزید پڑھیں